نمایاں ترین

5/31/2017 12:00:00 AM

مسٹرمودی کے 56 انچ نے ملک کی خارجہ پالسی کو بری طرح ناکام بنا دیا ہے



وزیراعظم مودی کے لئے56 انچ وہ نمبر ہے جسے وہ بہت پسند کرتے ہیں۔  56 انچ سینے کی ناپ بتاتے ہوئے وزیراعظم کےعہدے کی دوڑمیں شامل مسٹرمودی کو یہ امید تھی کہ یہ جملہ ہندوستانی رائے دہندگان کوان کی طاقت کا پیغام دے گا۔

انتخابی مہم کے دوران اوراس کے بعد بھی مسٹرمودی نے کھوکھلی بیان بازی اورجھوٹی قوم پرستی کا پروپگنڈہ جاری رکھا۔ اس جھوٹے پروپگنڈہ کے ذریعہ وہ اس حقیقت کو چھپانے میں کامیاب ہو گئے کہ وہ پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کو ہموار کرنے میں بری طرح ناکام رہے ہیں۔
جب سے مودی اقتدارمیں آئے ہیں تب سے ہندوستان پر170 سے زائد دہشت گردانہ حملے ہو چکے ہیں۔ اپوزیشن میں رہتے ہوئے مسٹرمودی نے کہا تھا '' چین کی دراندازی سے لے کر پاکستان کے دہشت گردانہ حملوں تک  یو پی اے حکومت ملک کی سرحدوں کی حفاظت کرنے میں ناکام رہی ہے۔ مرکزی حکومت کب جاگےگی؟ ''

یہ ایک ایسا سوال ہے جسے شاید پیش روحکومتوں کے بجائے موجودہ بی جے پی حکومت سے پوچھا جانا چاہئے۔ جیسا کہ کانگریس نائب صدر راہل گاندھی نے لوک سبھا میں اپنی تقریرمیں حکومت کو یاد دلایا کہ یو پی اے حکومت نے وزیراعظم ڈاکٹرمنموہن سنگھ کے قابل قیادت میں کشمیرمیں امن قائم ہوا، روزگارکے مواقع پیدا کئے گئے، کشمیرکومرکزی دھارے میں شامل کیا گیا اورپاکستان کو سفارتی طورسے الگ تھلگ کرنے میں کامیابی حاصل کی گئی۔

یو پی اے کے بہترکاموں کوآگے بڑھانے کےبجائے پی ایم مودی جھوٹی قوم پرستی اورموقع پرستی کی سیاست کررہے ہیں جس کی وجہ سے کشمیرمیں تباہی مچ رہی ہے۔ پاکستانی دہشت گرد محض 6 ماہ میں 3 مرتبہ ہمارے جوانوں کا سرکاٹ لے گئے اورکشمیرمیں آئی ایس آئی ایس اور پاکستان کے پرچم کھلےعام لهرا ئے جا رہے ہیں۔

مزید یہ کہ پاکستان نے تقریبا 1400 مرتبہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے۔ اس کے لئے کون ذمہ دار ہے؟ بی جے پی یقینی طور پرنریندرمودی کےعلاوہ کسے مجرم ٹھرائے گی کیونکہ انہی کی قیادت میں یہ سب کچھ ہو رہا ہے؟

اپنی کھوکھلی بيان بازی کے ذریعہ وزیراعظم مودی پچھلی حکومتوں کے کاموں پرپانی پھیررہے ہیں۔  وہ ملک کی خارجہ پالیسی کو پوری طرح ناکام کرچکے ہیں۔ مسٹرمودی نے اپنی نادانی سے نیپال کوچین کی گود میں ڈال دیا ہے۔ روس کے ساتھ  70 سالہ پرانی دوستی میں دراڑ پیدا ہوگئی ہے۔ روس نے پاکستان سے ہتھیاروں کی پابندی ہٹا لی ہےاورچین پاکستان کے ساتھ مل کرتیزی سے آگے بڑھ رہا ہے۔ پاکستان کو الگ تھلگ کرنے کے بجائے وزیراعظم مودی نے ایشیا میں ہندوستان کوالگ تھلگ کرکے رکھ دیا ہے۔

ہندوستان ایک ایسا ملک ہےجسے اپنے اوپر فخر ہے۔ آزادی کے حصول کے بعد سے ہی ہندوستان آزاد ایجنڈے اوراہنی منفرد شناخت کوقائم رکھنے میں کامیاب رہا ہے۔ ملک کی بہتری کے لیے پنڈت نہرو سے لے کر ڈاکٹرمنموہن سنگھ تک تمام سابق وزرائےاعظم اپنی قربانیں پیش کی ہیں۔ انھوں نے بین الاقوامی سطح پرملک کے وقارکو قائم رکھنے کے لئے سخت جانفشانی کی۔ وہ مسٹرمودی کی طرح محض تصویری سفارت کاری پر یقین نہیں رکھتے تھے۔

 
انڈین نیشنل کانگریس، 24، اکبر روڈ، نئی دہلی – 110011، انڈیا، ٹیلیفون: 23019080-11-91 | فیکس: 23017047-11-91 | ای میل: connect@inc.in © 2012-2013 کل ہند کانگریس کمیٹی۔ جملہ حقوق محفوظ ۔ شرائط و ضوابط | رازداری پالیسی